دونوں طرف سے زیادتی ہوتی ہے لڑکے والے بھی ناجائز جہز طلب کر تے ہیں
رخصتی ہونے سے پہلے سسر اس کے پاس آیا اور کہنے لگا بیٹا ہماری بیٹی کو خوش رکھنااا!!!!!
لفظ خوش جیسے بجلی بن کر گرا ہو اس پہ!!!
وہ سوچنے لگا جیسے اس سارے مجمعے کے سامنے چلا کر کہے کیسی خوشی کونسی خوشی!!!!
خوشیوں کے لئے آپ نے کچھ چھوڑا ہے کیا!!!!
ایک متوسط طبقے کے نوجوان سے چھ تولے سونا، ڈیڑھ لاکھ مہر، بڑی بارات کا مطالبہ گاڑیوں کے خرچے۔۔ ڈیڑھ لاکھ دلہن کے کپڑے۔۔۔
ایک دن کا لہنگا جو دوسرے دن پہنا نہیں جا سکتا
تیس ہزار کا
سر سے پیر تک اس کا جسم قرضے میں ڈوبا
شادی جیسے مقدس اور خوشی کے موقع پہ ہرآن انہی سوچوں میں غرق
زہنی الجھاؤ میں گھرا۔۔ اندر ہی اندر کڑھن کہاں سے دے گا وہ یہ سب!!!

ایک مہینے سے وہ ذلیل ہو رہا
دوست احباب کے توسط سے کبھی زیور ادھار کبھی کپڑے، کبھی شادی کے دن کھانے کا سامان۔۔۔
جس دن ماں جی نے چھ تولے سونے کا کہا کہ وہ کہ رہے وہ تو اسی دن مکر جانا چاہتا تھا لیکن ماں جی کی آنکھوں میں اس کی خوشیوں کی چمک، بہو کا سہانا خواب
آہ سب نے تو اسے بے بس کر دیا تھا
حالانکہ ابھی قرض لیے کچھ دن ہوئے شادی ابھی باقی لیکن دکانداروں کی نظریں اس پہ کہ کب ادھار کے پیسے دے گا
بازار سے گزرتے گردن اٹھانا محال تھا۔۔۔
وہ سوچ رہا تھا کہ پورے مجمعے کے سامنے پوچھے
کیا ہم اسی نبی کی امت ہیں
جس نے نکاح جیسے مقدس بندھن میں بندھنے کے لئے اتنے لوازمات کی بجائے ایک غریب صحابی سے کہا
اگر کچھ نہیں ہے تو لوہے کی انگوٹھی ہی لے آؤ
اور ایک صحابی کہ جو کچھ نہ رکھتے تھے کہا کہ کیا کچھ قرآن یاد ہے جواب دیا جی دس سورتیں
کہا یہی اس کا مہر ہے اسے سکھا دینا اور نکاح کرادیا
جلبیب رضی اللہ عنہ کا واقعہ مدینہ کا غریب ترین بے آس و بے سہارا نہ کام نہ کاروبار
لیکن مدینے کے امیر شخص کو پیغام میرے جلیبیب سے بیٹی کا نکاح کردے۔۔۔۔
یہ تھی ہمارے اسلاف کی اتنی مختصر، سادہ شادیاں
اور ایک ہم کے شادی کرنے سے پہلے ایک عذاب سے گزرنا پڑتا ہے اور شادی کے بعد ایک نیا عذاب۔۔۔۔۔
کیا دے گا وہ خوشی
جب وہ خود خوش نہ ہو گا
کیسے دے گا خوشی جب ادھار مانگنیں والے ادھار مانگیں گے
جب روز اسے ذلت سے گزرنا ہو گا۔۔۔!!!!

ایک کوشش!!!!
صرف اتنا بتانے کی کہ بیٹیوں کی خوشیاں چاہیے تو انہیں اسلامی طرز سے اسلامی لوگوں میں بیاہیں
یہ مال و زر خوشیوں کا نعم البدل ہر گز نہیں ہو سکتااااا!!!!!..
ذرا نہیں پورا سوچیں!!!
منقول
محمدسکندرجیلانی
Axact

Namal Shah

Namal Shah is Islamic Nayyab Girl , who love Islam and love to post Islamic Things and want to share islamic knowledge with every one so that Islam blessing reach to maximum people and every one enlight with islamic Knowledge.

Post A Comment:

0 comments: